61

خلا سے ایک بہت بڑی چٹان زمین پر گرنے والی ہے

جوگولڈن گیٹ برج ٹاور سے زیادہ یا لندن کے بگ بین کی اونچائی سے دو گنا ہے- ناسا کے مطابق ایک ایسٹورائڈ جوزمین کی طرف تیزی سے بڑھ رہا ہے۔ناسا کا کہنا ہے کہ تقریبا 755 فٹ قطر والے ایک کشودرگرہ (ایسٹورائڈ)کی قریب سے نگرانی کر رہے ہیں۔61،500 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے کرہ ارض کی طرف اڑنا ، نزد-ارتھ آبجیکٹ (NEO)اتنا بڑا ہے کہ اگر زمین سے ٹکرا جائے تو جہاں ٹکرائے گا اس پوری جگہ کو تباہ کر سکتا ہے۔قریب آنے والے کشودرگرہ ) ایسٹورائڈ (کی شناخت “2020 AQ1” کے طور پر کی گئی ہے۔ ؟غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ، ) ایسٹورائڈ (کشودرگرہ 20 جنوری کو صبح قریب 2.54 بجے زمین کے قریب پہنچے گا۔
یوروپی اسپیس ایجنسی (ESA) نے 21،655 NEO asteroids اور 109 NEO دومکیتوں (ایسٹورائڈ) کی نشاندہی کی ہے۔پچھلے برس ستمبر میں ، کشودرگروں (ایسٹورائڈ) کی ایک جوڑی زمین کے قریب سے گذری ۔ناسا کے ایسٹورائڈزسے متعلق دفاعی افسر لنڈلی جانسن نے کہا ، “یہ کشودرگرہ (ایسٹورائڈ) اچھی طرح سے مشاہدہ کیے گئے ہیں اور ان کے مدار زمین کے بہت قریب ہیں۔”

انہوں نے مزید کہا ، “یہ دونوں کشودرگرہ (ایسٹورائڈ) زمین سے لگ بھگ 14 قمری فاصلوں پر یا تقریبا 3.5 ساڑھے 3 ملین میل دور سے گزر رہے ہیں، لیکن چھوٹے کشودرگرہ (ایسٹورائڈز) ہروقت زمین کے قریب سے گزرتے ہیں۔”

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں